02 نومبر 1971

سبز چنبیلی کے پھول برص کا بے نظیر علاج ہیں

محمود ۔کوئٹہ، ایک بہن۔کراچی: آٹھ برس سے برص جیسے موذی مرض میں مبتلا ہوں۔ علاج سے اتنا فائدہ ضرور ہوتا ہے کہ داغ بڑھتے نہیں ہیں۔ لیکن بالکل ختم بھی نہیں ہوتے۔ علاج تو میں کراچی میں کرا رہا ہوں آپ برص سے نجات پانے کےلئے وظیفہ تجویذ کردیں۔
میں ایک مشرقی لڑکی ہوں آپ کو اپنا بڑا بھائی تصور کرکے خط لکھ رہی ہوں۔ امید ہے کہ آپ اپنی بہن کو مایوس نہیں کریں گے اور میرے مرض کےلئے علاج تجویذ کردیں گے۔
جواب: تین عدد سفید چینی کی پلیٹیں بازار سے نئی خریدیں اور ان کے اوپر زعفران کے پانی سے 
قُلْ ھُوَ الْمُعِیْنْ یَا مَعْرُوْفُ الْمَنَّانْ وَالْحَلِیْمْ
تین مرتبہ سورج نکلنے سے پہلے لکھ لیں اور صبح دوپہر شام ایک ایک پلیٹ پانی سے دھوکر چالیس دن تک پئیں۔ اور نہارمنہ سبز چنبیلی کے پھولوں کو چائے کی طرح دم دے کر روزانہ تین ہفتہ تک کوئی چیز ملائے بغیر پئیں۔ انشاءاللہ برص کے داغوں سے نجات مل جائے گی۔

01 نومبر 1971

چہرہ کی کشش اور پروقار شخصیت کا عمل

کوثر۔ حیدر آباد: مجھے ایسا وظیفہ بتادیجئے جس سے میری شخصیت میں وقار، چہرہ میں دلکشی اور آنکھوں میں چمک پیدا ہوجائے۔ میں سورۂ یوسف کی آیت کا وظیفہ پڑھ سکتا ہوں۔ کوئی عمل بتا دیجئے۔
جواب: چہرہ میں کشش اور پروقار شخصیت کےلئےآپ سفید رنگ کی پلیٹ پر مندجہ ذیل نقوش بنائیں اور صبح نہار منہ پلیٹ دھوکر پی لیا کریں۔ یہ عمل نوے دن کرنے کا ہے۔ انشاءاللہ آپ کا مقصد حاصل ہوجائے گا۔ یہ نقوش زعفران کے پانی سے پلیٹ پر لکھے جائیں۔


ایم۔اے۔آر۔ ٹنڈو الہ یار: گردن، ٹھوڑی اور ہونٹ پر مونچھوں کے بال اگ آئے ہیں۔ ڈرتی ہوں کہ کہیں بڑے نہ ہوجائیں۔ چہرہ ہر وقت چکنا رہتا ہے۔ منہ دھونے کے چند منٹ بعد پھر چکنا ہوجاتا ہے۔ ایسا معلوم ہوتا ہے کہ چہرے پر تیل ملا ہوا ہے۔
جواب: آپ چکنائی اور مٹھاس زیادہ استعمال کرتی ہیں۔ اگر آپ ابھی موٹی نہیں ہوتی ہیں تو بہت جلد موٹاپا آپ کے وجود میں پھیل جائے گا اور جسمانی تناسب بدہئیت ہوجائے گا۔ میرا مشورہ ہے کہ چکنائی اور زیادہ مٹھاس کھانا ترک کردیجئے۔ نمک بھی بہت کم استعمال کیا جائے۔ کسی ہوشیار لیڈی ڈاکٹر سے رجوع کیجئے۔ تساہل اور شرم بعض اوقات مرض کو پیچیدہ بنا دیتی ہے۔

ن۔خ۔ کراچی: میں بہت زیادہ کالے رنگ کی لڑکی ہوں کوئی عمل بتادیجئے کہ میرا رنگ صاف ہوجائے۔
جواب: رات کو سوتے وقت اور صبح ناشتہ سے ایک گھنٹہ پہلےڈبہ کے دودھ میں خالص شہد ملاکر پی لیا کیجئے۔ ڈبہ کا دودھ پاؤڈر کا ہونا چاہئے۔ پاؤڈر گھول کر دودھ بناتا ہے۔

ن۔پ۔ر۔کراچی: آنکھوں میں حلقے پڑگئے ہیں۔ آنکھوں کے نیچے سیاہ رنگ کی جھائیاں ہیں۔ چہرہ کی چمک بالکل ختم ہوگئی ہے۔ ناک بہت موٹی اور آنکھیں بہت چھوٹی ہیں۔
جواب: سیاہ حلقے اور جھائیاں ـ نسوانی مرض کی علامت ہیں۔ براہ کرم کسی ہوشیار لیڈی ڈاکٹر سے پرہیز کے ساتھ مکمل علاج کرائیے۔

ر۔س۔ سنگاپور: آپ نے بھائی جان کے سرخ رنگ داغوں کے لئےروغن سورنجان تلخ تجویذ کیا تھا۔ آٹھ دن ہوگئے ہیں داغ ویسے کے ویسے ہی ہیں لیکن اتنا فرق ضرور ہوا ہے کہ داغ جو چہرے پر نمایاں تھا اب کم ہوگیا ہے۔ یعنی غور سے دیکھنے پرنظر آتا ہے پہلے کی طرح دور سے نظر نہیں آتا۔
جواب: آپ کے بھائی جان روغن سورنجان تلخ استعمال کرتے رہیں۔ انشاءاللہ داغ دھبّے سب ختم ہوجائیں گے۔

01 اکتوبر 1971

پھیلی ہوئی ناک چہرے پر بری لگتی ہے

شمیم حسن: میری ناک بہت پھیلی ہوئی ہے جس کی وجہ سے بہت بد نما معلوم ہوتی ہے۔ رنگ  بھی سانولا ہے۔ میرے یہ دونوں مسائل حل کردیں کیونکہ کہیں ایسا نہ ہو کہ شادی کے معاملہ میں یہ حائل ہوں۔
جواب: سورۂ یوسف کی آیت
 قَالَ يَا بُشْرَىٰ هَٰذَا غُلَامٌ ۚ وَأَسَرُّوهُ بِضَاعَةً ۚ 
ایک سو مرتبہ پڑھکر ہاتھوں پر دم کریں اور ہاتھ چہرہ پر پھیر لیں اور گفتگو کئے بغیر سوجائیں۔ نوے دن تک

کمر میں چک آگئی

ایس۔اے۔ مانسہرہ:  ۱۵ سال سے میری کمر میں مستقل درد ہے۔ اس کی ابتداء اس دن سے ہوئی جب میں نے اپنی محترمہ دادی صاحبہ کو جو فالج کی مریضہ ہیں سہارا دے کر اٹھانے کی کوشش کی۔ ہر قسم کا علاج کروالیا لیکن بے سود۔ نیز میرے بال تیزی سے سفید ہوتے جارہے ہیں۔ اب گنتی کے چند بال سیاہ رہ گئے ہیں۔ آپ سے درخواست ہے کہ میری دونوں تکالیفوں کا کوئی حل تجویذ فرمائیں۔
جواب: دو حصے باجرہ اور ایک حصہ چاول کی کھچڑی پکائیے۔ ایک ہفتہ تک روزانہ ایک وقت صرف باجرہ کی کھچڑی کھائیے۔ کمر کہ اس درد سے نجات مل جائے گی۔ بالوں کو سیاہ کرنے کے لئے ہلیلہ سیاہ کوٹ چھان کر سفوف بنالیں۔ رات سوتے وقت کھانا کھانے کے تین گھنٹہ بعد ۶ ماشہ(ایک کھانے کا چمچ) یہ سفوف پانی کے ساتھ کھالیا کیجئے ۔ چھہ مہینے کے متواتر عمل سے انشاء اللہ بال کالے ہوجائیں گےاور آپکی عام صحت بھی عمدہ ہوجائے گی۔ چھہ مہینے کے عرصہ میں بڑا گوشت نہ کھائیں۔ سبزیاں زیادہ سے زیادہ استعمال کریں۔ سبزی میں کریلا بکثرت استعمال ہونا چاہئے۔

یہ غلط ہے کہ وہم کا علاج نہیں

ارم بلوچ۔ کراچی: دسویں جماعت کی طالبہ ہوں۔ الجھن یہ ہے کہ میں ہر نماز کے پہلے میں تین تین مرتبہ وضو کرتی ہوں۔ مجھے وہم رہتا ہے کہ وضو ٹھیک نہیں ہوا اور میں پاک نہیں ہوں۔ دوسرے کاموں میں بھی یہی ہوتا ہے۔ بس پانی بہاتی رہتی ہوں۔ منٹوں کے کاموں میں گھنٹوں لگ جاتے ہیں۔ دو سال سے اس مرض میں مبتلا ہوں۔ اس وہم کی وجہ سے زندگی عذاب بن گئی ہے۔
جواب: کسی اچھے فوٹو گرافر سے پوسٹ کارڈ سائز کا نیگیٹو بنوائیے۔ فوٹو گرافر سے کہ دیجئےکہ اس پر برش نہ لگائے اور نہ ٹھیک کرے۔ جیسی حالت میں ہو دیدے۔ اس نیگیٹو کو فریم کراکے کمرہ میں ایسی جگہ لٹکا دیجئے جہاں بار بار آپ کی نظر پڑتی رہے۔ وقت ملنے پر وقفہ وقفہ سے اس کو آپ ارادتاً بھی دیکھئے۔ رات کو سوتے وقت بستر پر لیٹ کر بار بار دیکھئے۔ وہم کا مرض رفع ہوجائے گا۔

میں خود سے باتیں کرتا ہوں

عبد الحمید انصاری۔ حیدرآباد: میں بچپن سے دل ہی دل میں باتیں کرنے کا عادی ہوں۔ چلتے پھرتے خود سے سوال کرتا ہوں اور خود ہی جواب دے دیتا ہوں۔ بیشمار ترین کوششوں کے بعد بھی اس عادت کو ترک نہیں کرسکا ہوں۔ اس کیفیت کے مسلط رہنے کی وجہ سے حافظہ جواب دے گیا ہے۔ ایک دوسری مصیبت یہ ہے کہ خود ہی خود تو خوب باتیں کرتا ہوں لیکن کسی دوسرے آدمی سے بات نہیں کرسکتا۔ آواز حلق میں رہ جاتی ہے۔ کئی مرتبہ ملازمت ملتے ملتے رہ گئی کیونکہ میں انٹرویو کے وقت جواب ہی نہیں دے سکا۔ آپ میری اس پریشانی کا اندازہ خود لگاسکتے ہیں۔
جواب: اس شکایت کا تعلق براہ راست دماغ سے ہے۔ اور اس کا علاج یہ ہے کہ آپ چھوہارے کھائیں۔ ترکیب یہ ہے دو چھوہارے پانی میں دھوکر ایک پاؤ دودھ میں پکائیں۔ ایک یا دو جوش کے بعد پتیلی اتار کر رکھ دیں۔ صبح پھر ایک بار جوش دیں۔ ٹھنڈا کرکے چھوہارے کھالیں اور دودھ پی لیں۔ چند ہفتے میں انشاءاللہ خود سے بات کرنے کی عادت اور دوسری شکایت ختم ہوجائے گی۔

17 اگست 1971

حق تلفی اور ناشکری سے آمدنی کے ذرائع محدود ہو جاتے ہیں

صفیہ بانو۔ پنڈی: میرے گھر میں چھہ بیٹیاں ہیں جو جوان بیٹھی ہیں۔ پانچ سال پہلے ہمارا کاروبار بہت اچھا تھا مگر اب ہم پیسے پیسے کو محتاج ہیں۔ میرے شوہر نے اپنے بہنوئی کو کاروبار کرایا وہ صاحبِ حیثیت ہوگئے اور ہم محتاج۔ اس غربت اور تنگدستی کی وجہ سے ہماری بیٹیوں کے رشتے بھی نہیں آتے۔
جواب: تہجد کے دو نفل پڑھنے کے بعد مصلیّٰ پر بیٹھے بیٹھے تین سوبار
اِنَّ اللّٰهَ یَرْزُقُ مَنْ یَّشَآءُ بِغَیْرِ حِسَابٍ
کا ورد کریں۔ یہ بات نوٹ کرلیں کہ آپ  کے شوہر اور آپ سے لوگوں کے حقوق کا اتلاف ہوا ہے۔ اور ناشکری سے وسائل محدود ہوجاتے ہیں۔ جس سے انسان تنگدستی اور پریشانی میں مبتلا ہوجاتا ہے توبہ استغفار کیجئے اور آئندہ اس کوتاہی کو قریب نہ پھٹکنے دیجئے۔

01 جون 1971

روحانی ڈاک خدمت خلق کا ایک اہم ذریعہ بن چکا ہے

روحانی ڈاک کا کالم خدمت خلق کا ایک اہم ذریعہ بن چکا ہے۔ اللہ تعالیٰ ادارۂ جسارت اور اس کے منتظمین کو اس کا اجر ضرور دیں گے کہ انہوں نے اللہ کی مخلوق کی بہت بڑی ضرورت کو پورا کیا ہے۔ افسوس اس بات کا ہے کہ آپ ہر ایک کے دکھ کا مداوا ہوتے ہیں، لیکن اخبار میں ایک خاص بیماری (جنسی بیماری) جس میں آجکل کے نوجوان کثرت سے مبتلا ہیں اخبارمیں شائع نہیں کرتے ۔ میرے ایسے نا سمجھ لوگ اس بیماری میں مبتلا ہو کر عطائی حکیموں اور بناوٹی پیروں فقیروں کے چکر میں پھنس کر وقت کے ساتھ روپیہ بھی ضائع کرتے ہیں مگر کوئی فائدہ نہیں ہوتا۔ کسی سے کہ بھی نہیں سکتے شرم کی بات ہے ، میں وہ سب کچھ کرچکا ہوں جس کو تحریر میں نہیں لایا جاسکتا۔
جواب: ذرا ٹھنڈے دل سے سوچئے ، جب آپ انفرادی طور پر خط میں اپنے حالات وضاحت کے ساتھ نہیں لکھ سکتے ۔ تو یہی حالات اور ان کاحل اخبار میں ہم کس طرح شائع کر سکتے ہیں جبکہ اخبار میں گھروں میں عورتیں ، اوربچے بھی پڑھتے ہیں ۔ ایسے حضرات کو براہ راست جواب دے دیا جاتا ہے لیکن شرط یہ ہے کہ وہ اپنا پتہ لکھا ہوا جوابی لفافہ ارسال کریں۔

جسم کے ہر حصے میں درد ہوتا ہے

شہناز۔ کراچی: دوسال سے جسم کے ہرحصے میں درد ہوتا ہے۔ ایسا معلوم ہوتا ہے کہ کوئی سوئیاں چبھورہا ہے۔ڈاکٹر السر بھی بتاتے ہیں۔
جواب: میرا خیال ہے کہ آپ کے پیٹ میں کیڑے ہیں۔ ان کا علاج کرالیجئے۔ یہ تکلیف انشاءاللہ ختم ہوجائے گی۔ اس کے ساتھ ساتھ اخبار میں شائع شدہ ہینگ اور گھی کے نسخہ پر عمل کریں۔ گھی تیار کرکے پیٹ کے نیچے پیڑو پر مالش کی جاتی ہے۔ ثقیل، بادی، کھٹی چیزوں نیز زیادہ نمک مرچ سے پرہیز ضروری ہے۔

مجھے سبق یاد نہیں ہوتا

احمد البشیر۔کراچی۔ میں انٹر کا طالب علم ہوں ۔ جو کچھ یاد کرتا ہوں بھول جاتا ہوں۔ خاص طور سے انگریزی الفاظ کے معنی یاد نہیں رہتے ۔ امتحان قریب ہیں، میری بھی مدد کیجئے۔
جواب: آپ جب سب کاموں سے فارغ ہو کر سونے کے لئے بستر پر لیٹ جائیں تو اپنا نام لے کر خود کو مخاطب کیجئے ، اور کہئے۔ احمد البشیر، تم جو کچھ پڑھتے ہو وہ یاد رہتا ہے۔ انگریزی الفاظ کے معنی ذہن نشین ہو جاتے ہیں ۔ اس طریقہ پر اکیس روز عمل کیجئے انشاء اللہ آپ کا مسئلہ حل ہوجائے گا۔

مجھے مستقبل کا ایک اہم سفر مل گیا ہے

غلام احمد۔ لانڈھی۔ میں سخت ذہنی پریشانی میں گرفتار ہوں۔ امتحان میں کامیابی کے لئے جسارت میں شائع شدہ وظیفہ " یا اولی الالباب" پڑھنے کی اجازت چاہتا ہوں امتحان میں ایک مہینہ باقی رہ گیا ہے۔ کیا میں یہ وظیفہ امتحان دینے کے بعد پڑھ سکتا ہوں ؟ کیونکہ آجکل تو کورس کی کتابوں سے فرصت ہی فرصت نہیں ملتی۔ یہ بھی خدا کی قدرت ہے کہ مجھے مستقبل کا ایک ہم سفر مل گیا۔ وہ ہے "روحانی ڈاک" ۔
جواب: وظیفہ یا اولی الالباب ایک سو مرتبہ پڑھنے میں زیادہ سے زیادہ دس منٹ لگتے ہیں۔ دس یا پندرہ منٹ کا وظیفہ ایسا نہیں ہے جو کورس کی کتابیں پڑھنے میں حائل آئے ۔ یہ وظیفہ آپ ابھی سے شروع کر دیجئے اور امتحان کا نتیجہ شائع ہونے تک پڑھتے رہیں۔

والد کے انتقال کے بعد بھائی کے دماغ نے کام کرنا چھوڑ دیا ہے

ف۔س۔ب۔راولپنڈی: والد کے انتقال کے بعد بھائی کی دماغی حالت نارمل نہیں رہی ہے۔ دماغ پر اس قدر صدمہ ہے کہ جب ہم اس کو لکھنے پڑھنے کے لئے کہتے ہیں تو رونے لگتا ہے اگر ہوسکے تو اس سلسلے میں ہماری مدد کیجئے۔
جواب: بھائی جب رات کو گہری نیند سوجائے تو اس کے سرہانے کھڑے ہو کر گھر کے کوئی صاحب یہ عبارت پڑھ دیں۔پورا نام لے کر۔ تمہارا دماغ بہت مضبوط ہے دماغ حقیقی چیزوں کو قبول کرتاہے۔ پڑھنے لکھنے میں تمہارا دل لگتا ہے۔ اس طریقے پر ہفتے میں دو مرتبہ تین ہفتے تک عمل کیجئے۔

مفروضہ خیالات اور کاہلی پر میرا اعتماد نہیں

غ۔ف ۔ کراچی: جیسے جیسے امتحان قریب آرہے ہیں سر میں درد ہوتا جارہا ہے۔ امتحان کا تصور آتے ہی سر میں شدید درد شروع ہوجاتا ہے، پڑھنے بیٹھتا ہوں تو دماغ سن ہوجاتا ہے، بہت زیادہ جبر کر کے کورس کی کتابیں پڑھنے کی کوشش کرتا ہوں تو نیند کے بوجھ سے آنکھیں بند ہونے لگتی ہیں۔ سمجھ نہیں آتا کیا کروں۔؟

جواب: آپ نے سارا سال تو کھیل کود اور پڑھائی کی طرف عدم توجہی میں گزار دیا، اب جب امتحان سر پر آگئے تو آپ کو کتابیں پڑھنے کا خیال آرہا ہے۔ یہ طرز فکر انتہائی غلط اور نا مناسب ہے۔ آپ خود ہی سوچئے ، سال بھر کا کام ایک ماہ میں کیسے انجام دیا جاسکتا ہے۔ پڑھئیے اور برابر محنت کیجئے شاید آپ پاس ہوجائیں۔ میرے پاس کوئی ایسی کیمیا نہیں ہے کہ آپ محنت کے بغیر اور پڑھنے لکھنے میں کوتاہی کے باوجود پاس ہوجائیں۔ میں محنت اور اللہ کی دستگیری کا قائل ہوں، مفروضہ خیالات اور کاہلی پر میرا کوئی اعتماد نہیں ہے۔

امتحان میں ۹۰۰ نمبر لانے کیلئے وظیفہ

خ۔ب۔ناظم آباد: میرے دو انگریزی اور دو اردو کے پرچے ہوچکے ہیں۔ کل حساب کا پرچہ تھا جو زیادہ اچھا نہیں ہوسکا۔ اس سے میں سخت پریشان ہوں۔ آئندہ سائنس ، عربی ، اسلامیات، سو شل اسٹدی اور ہوم اکنامکس کے پرچے باقی ہیں۔
میں کے جی کلاس سے ساتویں جماعت تک ہمیشہ فرسٹ آتی رہی ہوں ۔ آٹھویں جماعت میں وظیفہ حاصل کرنے کیلئے ۹۰۰ سے زیادہ نمبر حاصل کرنے کیلئے وظیفہ بذریعہ اخبار جسارت بتائیے۔

جواب: رات کو بہت سویرے سو جائیے، چار بجے اٹھ جائیے، وضو کیجئے، دو نفل تہجد ادا کر کے مصلیٰ پر بیٹھے بیٹھے ایک سو ایک مرتبہ سورۂ قمر کی آیت
 وَلَقَدْ يَسَّرْنَا الْقُرْآنَ لِلذِّكْرِ فَهَلْ مِن مُّدَّكِرٍ
پڑھ کر آنکھیں بند کر کے مراقبہ کیجئے۔ اول آخر ایک ایک تسبیح درود شریف مراقبہ میں یہ تصور قائم کیجئے کہ آپ اللہ تعالیٰ کے سامنے بیٹھی ہیں ، جب ذہن یکسو ہوجائے تو اللہ تعالیٰ سے دعا کیجئے۔ یہ عمل نتیجہ شائع ہونے تک جاری رکھیں۔

عبادت الٰہی میں دل نہیں لگتا

محمد سلیم غازیانی: پہلے میں بہت ذوق و شوق سے خدا کی عبادت کرتا تھا ۔ پڑھائی میں بھی دل لگتا تھا مگر اب دونوں طرف توجہ نہیں رہی۔ ان دونوں دلچسپیوں کو بحال کرنے کیلئے آپ کی امداد کا منتظر ہوں۔
جواب: انسان کو ہر کام میں اعتدال پیش نظر رکھنا چاہئے۔ آپ نے اعتدال کا راستہ چھوڑ کر انتہا پسندانہ طرز عمل اختیار کیا نتیجے میں آپ کو محرومی نصیب ہوئی۔خدا کی عبادت کیجئے اتنی جو فرض کی گئی ہے۔ باقی وقت فرائض زندگی کو پورا کرنے میں لگائیے ۔ وظیفہ پڑھنے کی کوئی ضرورت نہیں ہے۔

امتحان میں کبھی فیل نہیں ہوا

قیصر اللہ۔کراچی۔ امتحان میں کبھی فیل نہیں ہوا ہوں لیکن پچھلے سال فیل ہوجانے کی وجہ سے گھر والے مجھے عجیب نظروں سے دیکھتے ہیں۔ گھر کے حالات کا تقاضا بھی یہی ہے کہ میں جلد از جلد تعلیم سے فارغ ہو کر میں معاش کے کاموں میں لگ جاؤں۔
جواب: صبح فجر کی ادا نماز کے بعد سورۂ رحمن کی آیت فبائی آلاءربکماتکذبن سو مرتبہ پڑھ کر ہاتھوں پر دم کیجئے اور چہرے پر پھیر لیجئے۔ امتحان کا نتیجہ شائع ہونے تک

ب۔حسن: میں بی اے میں پڑھ رہی ہوں چاہتی ہوں کہ کسی اسکول میں مجھے ملازمت مل جائے ۔ بہت سے اسکولوں میں گئی مگر ہر جگہ ناکامی کا منہ دیکھنا نصیب ہوا اس وقت مجھے سروس کی اشد ضرورت ہے۔ کوئی دعا بتادیجئے۔
جواب: عشاء کی نماز کے بعد سونے سے پہلے گیارہ مرتبہ قل ھو اللہ شریف پڑھ کر ہاتھوں پر دم کیجئے اور ہاتھ تین مرتبہ چہرے پر پھیر لیجئے ۔ کوشش یہ کیجئے کہ آپ کو پرائیویٹ ٹیوشن مل جائے۔ انشاء اللہ آپ کامیاب ہوجائیں گی۔

طلباء اور طالبات کے مسائل

فہمیدہ خاتون ۔ کوئی کتاب لے کر بیٹھتی ہوں تو الجھن ہونے لگتی ہے۔ لوگ کہتے ہیں کہ ہم جس مکان میں رہتے ہیں یہ مکان منحوس ہے۔
جواب: مکان میں ہر گز کوئی نحوست نہیں ہے۔ یہ سب باتیں غلط ہیں۔ لاطائل باتوں سے ہٹ کر پڑھائی کی طرف توجہ دیجئے انشاء اللہ الجھن نہیں ہوگی۔

کمر میں شدت کا درد ہے

ایم خان۔کراچی۔ میری اہلیہ کی کمر میں عرصہ دس سال سے پچھلے حصہ میں شدید درد ہوتا ہے ۔ یہ درد صبح اٹھتے وقت اتنا زیادہ ہوجاتا ہے کہ وہ پلنگ سے نیچے نہیں اتر سکتیں دن میں درد کی شدت میں کافی کمی ہوجاتی ہے۔ پانچ بچے ہیں بڑے بچے کی عمر دس سال اور سب سے چھوٹے کی عمر چھ سال ہے باقی صحت نارمل ہے البتہ قبض کبھی کبھار ہوجاتا ہے۔
جواب: السی کا تیل اپنے سامنے نکلوائیے۔ ہرے رنگ کی صاف شفاف شیشی میں تقریباََ آدھا سیر تیل ڈالکر کسی ایسی جگہ رکھ دیجئے ۔ جہاں سارا دن دھوپ رہتی ہو۔ چالیس دن رات گزرنے کے بعد شیشی اٹھا لیجئے ۔ اگر چالیس روز کے عرصے میں بادل چھا جائیں بارش آجائے تو یہ چالیس دن میں شمار نہیں ہونگے ان دنوں کو شمار کر کے شیشی کو مذید دھوپ میں رکھا رہنے دیں ۔ تیل تیار ہوجانے پر ریڑھ کی ہڈی پر اس تیل کی مالش کرائیں ۔ مالش رات کو سوتے وقت ہونی چاہیئے انشاء اللہ کمر کا درد ہمیشہ ہمیشہ کے لئے ختم ہوجائے گا۔

ایسی غلطی ہوگئی جو معاف نہیں کی جاسکتی

گمنام۔ مجھ سے ایک ایسی غلطی سر زد ہوگئی ہے جس کے بارے میں میرا خیال ہے کہ وہ کسی بھی صورت میں معاف نہیں کی جاسکتی ۔ اس غلطی کے رد عمل نے میرا ذہنی سکون معطل کر دیاہے۔ امتحان میں پرچے خراب کر آئی ہوں جبکہ میں اپنے ساتھیوں میں ذہین ترین طلبہ ہوں۔ اسکول کی ایک لڑکی نے میرے ساتھ دشمنی کی! مس کہتی ہیں کہ تمہیں تین سال کیلئے اسکول سے نکال دیا جائے گا۔ میں نے رو رو کر برا حال کر لیا ہے ۔ میں ایک یتیم اور بے سہارا لڑکی ہوں ۔ اگر مجھے اسکول سے نکال دیا گیا تو میری زندگی میں اندھیرے جنم لے لیں گے ۔ خدا کیلئے میری مدد کیجئے۔
جواب: آپ بالکل مطمئن رہیں آپ کو اسکول سے نہیں نکالا جائے گا ۔ یہ میرا فیصلہ ہے۔ البتہ آپ اپنی مس سے غلطی کا اعتراف کر کے معا فی ضرور مانگ لیں، وہ آپ کو معاف کر دیں گی۔ اچھے لوگ کبھی کسی کا مستقبل بر باد نہیں کرتے۔ اللہ تعالیٰ اپنے بندوں کی بڑی سے بڑی غلطی معاف کرنے کی قدرت رکھتے ہیں اور اپنے وصف سے خوش ہوتے ہیں۔ بندے کا کام اعتراف جرم کے بعد اللہ تعالیٰ کے حضور معافی مانگنا ہے اللہ تعالیٰ قبول فرما لیتے ہیں۔

13 اپریل 1971

میں نے اللہ کیلئے اپنا سب لٹا دیا اور اب میں پیسے پیسے کو محتاج ہوں

جنت خاں گڈی خیل (بنوں): جب سے میں نے ہوش سنبھالا ہے، مذہب سے دیوانگی کی حد تک شفقت ہے یہاں تک کہ والدین کا چھوڑا ہوا اثاثہ بھی سب اللہ کی راہ میں خرچ کردیا اب پیسے پیسے کو محتاج ہوں۔ محنت مزدوری جسمانی ضعف کمزوری کی بنا پر نہیں کرسکتا ۔ آپ مجھے مشورہ دیں کہ زندگی کے ضروری اخراجات پورے کرنے کیلئے کیا طرز عمل اختیار کروں۔ ہر وقت یہ خیال ذہن پر مسلط رہتا ہے کہ مجھ سے اللہ رسول کے معاملہ میں کوئی لغزش نہ ہوجائے۔ برے برے خیالات آتے رہتے ہیں۔
جواب: اللہ تعالیٰ اور رسول اکرم صلی اللہ علیہ وسلم رحمتہ اللعالمین ہیں۔ انسان کے اندر ایک نیک نیت ہستی ہوتی ہے ۔ یہ ہستی اللہ اور اس کے حبیب کے بارے میں ہمیشہ پر امید رہتی ہے اس ہستی کے متضاد ایک اور ہستی بھی ہوتی ہے جو انسان کو شک اور شبہ اور خواہ مخواہ کے خوف میں مبتلا رکھتی ہے ۔ لیکن اسکی مخالفت سے نیک ہستی کبھی محروم نہیں ہوتی۔ آپ ہر گز نہ سوچئے کہ آپ سے اللہ رسول کے معاملہ میں کوئی لغرش یا خطا سر زد ہوجائے گی۔ اللہ تعالیٰ دلوں کا حال جانتا ہے وہ غفور الرحیم ہیں۔ خیالات آتے نہیں لائے جاتے ہیں۔ اس لئے خیالات کے اوپر باز پرس نہیں ہے اورنہ ان کیلئے انسان کو گناہ گار قرار دیاجاسکتا ہے۔ آپ اس قسم کے خیالات کی ہر گز پرواہ نہ کریں۔ نہ ان کا کوئی نوٹس لیں ۔ اللہ رسول کے معاملے میں کوئی ایسا خیال جو نا پسندیدہ ہو اس کیلئے تو بہ استغفار بھی نہ کیجئے۔ ان خیالات کو آنے دیجئے اور لاپرواہی اختیار کر لیجئے۔ اللہ رسول کی محنت میں آپ نے اپنا سب اثاثہ لٹا دیا ۔ بظاہر یہ نیک عمل ہے لیکن اس میں انتہا پسندی کو دخل حاصل ہے۔
قران و سنت کی روشنی میں انسان کے اوپر اپنے اہل و عیال اور خود اپنی ذات کے حقوق بھی عائد ہوتے ہیں موجودہ طرز عمل سے ان حقوق کا اتلاف ہوا ہے جو اللہ تعالیٰ کے قانون کے تحت آپ کے اوپر فرض نہیں۔ بہرحال جو کچھ ہو چکا اسے بھول جائیے اور اب صحیح طرز فکر اختیار کر کے کوئی بھی چھوٹا موٹا کام شروع کردیجئے ایک بات یاد رکھئے جو کام بھی کریں اللہ تعالیٰ کی ذات پر کامل یقین اور اپنی تمام صلاحیتوں کو بروئے کار لا کر کریں۔ انشاء اللہ بہتری پیدا ہوجائے گی

میرے لئے کونسی ملازمت بہتر رہے گی!

فضل کریم ۔ کنٹری کلب روڈ کراچی :میں بحری جہاز میں ملازمت کرنا چاہتا ہوں۔ یہ ملازمت میرے لئے بہتر رہے گی یا نہیں اس کیلئے استخارہ کرنا چاہتا ہوں۔ براہ کرم استخارہ لکھ دیجئے۔ جواب: سب کاموں سے فارغ ہو کر جب آپ سونے کیلئے بستر پر جائیں تو چار پائی کے قریب بیٹھ کر ایک سو مرتبہ" افتح افتح افتح یا بدیع العجائب بالخیر یا بدیع"پڑھ کر دونوں ہاتھوں پر دم کریں اور ہاتھ چہرے پر پھیر لیں ۔ کسی سے بات کئے بغیر بستر پر سیدھی کروٹ لیٹ جائیں ۔ اور مقصد ذہن میں رکھے ہوئے سوجائیں۔ انشاء اللہ پہلے ہی دن یا زیادہ سے زیادہ تین دن میں آپ کو یہ بات معلوم ہوجائے گی کہ بحری جہاز کی ملازمت آپ کیلئے اچھی ہے یا نہیں؟

زنانی بیماریوں کا علاج

آج اخبار میں میرا خط شائع ہوا تو یہ پڑھ کر حیران ہوں کے میرے مختصر حالات سے آپ نے یہ اندازہ لگا لیا کہ مجھے کوئی زنانی بیماری لاحق ہے۔ جی ہاں بیماری تو ہے لیکن مجھے اس مسئلے پر لکھنا پسند نہیں تھا۔ اب چونکہ آپ کے سامنے حقیقت آگئی ہے اور مجھے علاج بھی کرانا ہے اس لئے تفصیلات تحریر ہیں۔ تقریباََ ۱۹ سال سے سیلان الرحم(لیکوریا)کے مرض میں مبتلا ہوں۔ نو یا دس سال کی عمر میں یہ بیماری لگ گئی تھی ۔ بچپن میں تو میں یہ سمجھی ہی نہیں کہ یہ سب کیا ہے بڑے ہونے پر معلوم ہوا کہ یہ بیماری ہے تو شرم سے خاموش رہی شادی کے بعد علاج کا سلسلہ شروع ہوا تو ڈاکٹر نے بتایا کہ یہ مرض پرانا یا پیچیدہ ہوچکا ہے۔ ہسپتال میں داخل رہی ۔ مختلف علاج بھی کرائے مگر چند ہفتوں کیلئے مرض میں کمی ہوئے ۔ اور پھر وہی حال ہوگیا۔ خیال تھا کہ انگلینڈ میں صحیح علاج ہوجائے گا۔ لندن میں ڈاکٹروں نے مختلف قسم کے معائنے کئے ۔ بہت سے ایکسرے لئے اور پھر بتایا کہ جسم میں کسی قسم کی خرابی یا کوئی نقص نہیں ہے ۔ درد اور سیلان الرحم کی وجہ نفسیاتی ہیں۔ وقت گزرنے کے ساتھ ساتھ خود بخود ختم ہوجائے گی۔
جواب: ۲ سیر کیکر کی چھال لے کر اس کے چھوٹے چھوٹے ٹکڑے کرلیں۔ ان ٹکڑوں کو پانی میں جوش دیں۔ اتنا پکائیں کہ پانی رنگین اور گاڑھا ہوجائے۔ پانی کی مقدار اتنی ہونی چاہئے ک جب آپ اس میں بیٹھیں تو آپ کا جسم ناف تک پانی میں ڈوبا رہے۔ اس جوش شدہ پانی میں سے کیکر کی چھال کے ٹکڑے نکال کر پھینک دیں۔ پانی کسی ٹب میں ڈال لیں اور اس ٹب میں گھڑی دیکھ کر بیس منٹ تک بیٹھی رہیں۔ پانی اتنا گرم ہونا چاہئے کہ جس کی گرمی آپ برداشت کرسکیں۔ اس علاج پر تین ہفتے عمل کیجئے ہفتے میں دو مرتبہ۔ کیکر کی چھال ہر مرتبہ نئی ہونی چاہئے تین ہفتوں کے علاج سے انشاء اللہ سیلان الرحم کی تکلیف بالکل ختم ہوجائی گی۔

پیدائشی نقص کے ساتھ بچی پیدا ہوئی اور چالیس۴۰دن زندہ رہ کر مرگئی

میری پہلی پریشانی یہ ہے کہ آج سے دس ماہ پہلے میرے پہلوٹھی کی لڑکی پیدا ہوئی تھی۔ بچی کی پیدائش بہت زیادہ تکلیف سے ہوئی اور میں مرتے مرتے بچی، لیکن اس سے بڑی پریشانی بچی کا پیدائشی نقص تھا۔ ۴۰ روز بچی زندہ رہی لیکن چالیس دن اس نے جس تکلیف میں گزارے اس کی یاد مجھے آج بھی بے چین کردیتی ہے۔ بچی کا دماغ نامکمل تھا۔ اس کے علاوہ اس کے سر کے اندر پانی بھرا ہوا تھا۔ اور پشت پر کافی بڑا پھوڑا تھا۔ دوسری الجھن یہ ہے کہ خدا نے میرے اوپر دوبارہ رحم کیا ہے۔ تیسرا مہینہ ہے۔ میرے دل میں ہر وقت وہم آتے ہیں کہ خدا نخواستہ میرے دوسرے بچے میں بھی کوئی نقص نہ ہو، میں پانچوں وقت کی نماز پڑھتی ہوں۔ کسی نے بتایاہے کہ عشاء کی نماز کے بعد چالیس (۴۰) دن تک سورۂ یٰسین پڑھ کر پیٹ پر دم کرنے سے صحت مند لڑکا پیدا ہوتا ہے اس کے علاوہ آیت کریمہ کا ختم مانا تھا۔ وہ بھی پڑھتی ہوں ایک تعویذ کسی بزرگ کا دیا ہوا بازو پر بندھا ہوا ہے جس پر ’’ھُوَ اللہُ حَیُّ الْقَیُّومْ‘‘ کا لفظ نو بار لکھا ہوا ہے۔ آپ کی روحانی ڈاک میں کئی بار پڑھ چکی ہوں۔ وظائف کی زیادتی بجائے فائدہ کے نقصان کا باعث ہوتی ہے۔ آپ کی خدمت میں تفصیل سے ساری روئیداد لکھدی ہے آپ مجھے مشورہ دیں کہ یہ وظائف اور تعویذ میرے لئے مناسب ہیں یا نہیں؟ اس کے علاوہ کوئی وظیفہ یا تعویز ایسا لکھ دیں کہ جس سے دردِ زہ کی تکالیف آسان ہوجائے۔
 جواب: آپ کا خون صحتمند نہیں ہے۔ کمزور ہے پہلے بچہ پر خون کی اس نقص کی وجہ سے خراب اثرات مرتب ہوئے۔ ماں کے پیٹ میں بچی کی نشونما نا مکمل رہ گئی۔ اس کا دماغ اس قابل نہیں ہوسکا کہ وہ زیادہ دیر اس فضا میں سانس لے سکے۔ آپ کے اس نقص کو دور کرنے کیلئے علاج تجویز کیا جارہا ہے۔ اس پر عمل کیجئے۔
علاج: آدھ سیر عمدہ قسم کا عناب لے لیجئے۔ روزانہ رات کو سونے سے پہلے سات عدد عناب ایک پیالی پانی میں بھگودیجئے(یہ پانی اسٹیل کی پتیلی میں پکا کر پہلے جوش کرلیں۔ جب پانی ٹھنڈا ہوجائے اس وقت اس میں عناب ڈالیں)۔ عناب رات بھر بھیگے رہنے دیجئے۔ صبح سورج نکلنے سے پہلے عناب پانی میں مسل لیں اور اس پانی کو کپڑ چھان کرکے نہار منہ پی لیں۔ دل چاہے تو ایک چمچہ چینی ملالیں ورنہ کوئی ضرورت نہیں۔ پانی نوش کرنے کے بعد پہلے تین مرتبہ اِقْرَأ بِاسْمِ رَبِّکَ الَّذِیْ خَلَقَ ۔ خَلَقَ الْاِنْسَانَ مِنْ عَلَقْ پڑھکر پانی پر دم کردیں۔ یہ عمل اور علاج ولادت تک جاری رکھیں۔ جس روز ٹھنڈ ہو اس دن عناب کا مقطر پانی نیم گرم کرکے پئیں۔ دردِزہ کی کی تکلیف سے نجات پانے کے لئے میرے پاس نہایت زود اثر تعویذ ہے۔ پیدائش سے کچھ عرصہ پہلے خط لکھ کر یہ تعویذ منگالیں۔ وظیفہ کوئی نہ پڑھیں۔ البتہ آیت کریمہ کا ختم کی جو منّت مانی تھی اسے تھوڑا تھوڑا کر کے پورا کردیں۔ بزرگ کا دیا ہوا تعویذ ہاتھ پر بندھا رہنے دیں۔

09 مارچ 1971

مستقبل میں بہت سی الجھنیں پیش آنے کا خطرہ ہوگیا ہے

ب۔ا۔س کراچی: میں بعض ناگزیر خیالات کی بنا پر زیر بار ہوں جس سے طبیعت پریشان اور متفکر رہتی ہے ۔ براہ کرم ادائیگی قرض کیلئے کوئی زود اثر وظیفہ تحریر فرمادیں۔ کچھ عرصے سے پریشان کن خواب دیکھ رہا ہوں ۔ دو تین ماہ ہوئے دیکھا کہ ہوائی اڈے یا ریلوے اسٹیشن سے بغل میں قران مجید دبائے چلا آرہا ہوں ۔ باہر بارش ہورہی ہے بر آمدے کے اندر بارش کی پھو ہار آرہی ہے۔ دیکھا کہ مکان تبدیل کر رہا ہوں اور سامان باہر سر راہ پڑا ہوا ہے ۔ پھر دیکھا کہ بچے موجودہ صحن میں سو رہے ہیں ۔ ہلکی سی بارش یا بوندا باندی ہورہی ہے ۔ مگر وہ بارش میں پڑے رہتے ہیں ۔ میں بیوی سے کہتا ہوں کہ بچوں کی چارپائیاں اور بستر کمروں کے اندر کردو۔ پرسوں رات دیکھا کہ محکمہ کے افسر اعلیٰ میرے کمرے میں آتے ہیں مگر مرے کمرے میں اندھیرا ہے شاید باہر بادل چھائے ہوئے ہیں ۔ میں اپنی میز پر رکھے ہوئے لیمپ کا سوئچ دبا کر اسے روشن کرنا چاہتا ہوں مگرلیمپ روشن نہیں ہوتا۔ پرسوں رات دیکھا کہ ایک کمرے میں بستروں کا ڈھیر لگا ہوا ہے ایک چارپائی پر والدہ لیٹی ہوئی ہیں غالباََ علیل ہیں ۔ میں کمرے کا دروازہ کھول کر باہر آجاتا ہوں ۔ دوسرے کمرے کا دروازہ کھولتا ہوں تو وہاں تاریکی ہے ۔ فرش پر ریت کی دبیز تہہ بھی جمی ہوئی ہے ۔ بعض زہریلے اور خطرناک جانوروں کی موجودگی کا احساس بھی ہوتا ہے میں ریت میں دھنسنے لگتا ہوں اور واپس لوٹنا چاہتا ہوں ۔ آخر تھوڑی سی جدوجہد کے بعد وہاں سے نکل آتا ہوں یا نکالا جاتا ہوں۔
جواب: یہ سارے خواب ان باتوں کی طرف اشارہ کرتے ہیں۔(۱) یہ کہ فی الوقت جو طرز فکر استعمال کی جارہی ہے وہ انتہا پسندانہ ہے (۲) حقوق کا اتلاف ہورہا ہے۔ نامناسب روش فکر سے ذہن کے اوپر مستقل بار ہے اور یہ بار اب تاریکی میں تبدیل ہورہا ہے۔ قرض میں زیر بار ہونا بھی اس سلسلے کی کڑی ہے ۔ گھریلو معاملات میں اعتدال پسند رویہ اختیار کیجئے ۔ انشاء اللہ حالات سازگار ہوجائیں گے ۔ خواب میں دیکھے ہوئے نقوش ایسی فلم پیش کررہے ہیں جس پر بتایا جارہا ہے کہ اگر موجودہ طرز عمل برقرار رہا تو مستقبل میں بہت سے الجھنیں پیش آسکتی ہیں ۔

دل، دماغ اور روح میں کیا فرق ہے

وقار یوسف ناظم آباد ۔ کراچی: جسم انسانی گوشت پوست کا پنجرہ ہے ۔ اس پنجرے کے اجزائے ترکیبی میں جو چیزیں ہڈیوں اور گوشت کے پنجرہ کو متحرک رکھنے کی ضامن ہیں ان میں روح، دماغ اور دل قابل ذکر ہیں ۔ دل کی حرکت بند ہوجائے تو انسانی زندگی کو تحریک دینے والے سارے عوامل ساکت ہوجاتے ہیں ۔ دماغ کام کرنا چھوڑدے تو دماغ میں کام کرنے والے اربوں کھربوں خلئے اس طرح بے موت مر جاتے ہیں کہ زندگی ایک لاش بن کر رہ جاتی ہے ۔ روح جس پر دماغ اور دل کا سارا دارومدار ہے منہ موڑے تو انسانی جسم کی ساری مشینری درہم برہم ہوجاتی ہے۔ استدعا ہے کہ یہ بتایا جائے کہ دل و دماغ اور روح میں کیا فرق ہے۔

جواب: قران پا ک میں اللہ تعالیٰ نے فرمایا ہے ، ارشاد ہے کہ لوگ مجھ سے فواد کرتے ہیں۔ اس کا ترجمہ ایرانی اور اردو ادب میں دل کہا جاتا ہے ۔ قران پاک میں فواد سے مراد فکر کرنے سوچنا اور سمجھنا لیا جاتا ہے اس کیلئے ایرانی ادب والے دل کا لفظ استعمال کرتے ہیں ۔
قران پاک میں جس کو سوچنا اور سمجھنا فرمایا گیا ہے وہ اللہ تعالیٰ کی طرف سے ہے ۔ یعنی اللہ تعالیٰ کے وصف کا عمل ہے اور اللہ تعالیٰ کا وہ وصف اور وہ عطیہ " روح" ہے۔ یہ کام روح انجام دیتی ہے ۔ روح جسم سے رشتہ منقطع کرے تو دل اور دماغ دونوں کی تحریکات ختم ہوجاتی ہیں ۔ روح کو دماغ کہ سکتے ہیں نہ دل۔ اگر دل گوشت کے ٹکڑے سے مراد ہے تو اس ٹکڑے کا زندگی کو متحرک رکھنے والے عمل سے کوئی تعلق نہیں ہے۔ اہل زبان بطور استعارہ کے سوچنے کے عمل کو دماغ یا دل سے منسوب کرتے ہیں لیکن اس عمل کا تعلق محض روح سے ہے۔
روحانیت میں دماغ اور دل کا کوئی مقام نہیں ہے اور نہ ان کی کوئی اپنی کارگزاری ہے۔ کارگزاری صرف روح کی ہے ۔ روح جب تک ان سے کام لینا چاہتی ہے تو یہ روح کیلئے کام کرنے پر مجبور ہیں۔

قوت ارادی

عبدالواحد لیاقت آباد : عبدالماجد نام اچھا ہے۔ نام بدلنے کی ضرورت نہیں ہے۔ آپ یہ سمجھتے ہیں کہ نام بدلنے سے آپ کے اندر قوت ارادی بحال ہوجائے گی لیکن میرا خیال یہ ہے کہ نام کی تبدیلی سے کچھ نہیں ہوگا۔ آپ اپنی انا کو ٹٹولئے۔ انا کے اندر ڈوب کر اس بات کا کھوج لگائے کہ قوت ارادی کہاں دبی ہوئی ہے ۔ آپ کا علاج خارجی نہیں اندرونی ہونا چاہیئے ۔ رات کو سونے سے پہلے سیدھے لیٹ کر اپنا تصور کیجئے۔ تصور کا وقفہ پندرہ منٹ ہے۔ اس عمل کو چالیس روز برقرار رکھئے انشاء اللہ آپ کا مسئلہ حل ہوجائے گا۔

پوشیدہ امراض سے نجات

اقتدار احمد: پوشیدہ بیماری سے نجات حاصل کرنے کیلئی ہر وقت با وضو رہیں اور سوتے وقت روئی کا گدا استعمال نہ کیا جائے ۔ دری یا چٹائی پر سویا کریں ۔ گرم چیزوں سے پرہیز کرنا ضروری ہے ۔ کچی سبزیاں اور پالک کثرت سے کھایا کریں۔ چند ہفتوں میں مرض سے مکمل نجات مل جائے گی ۔ اسی طریقہ علاج سے آپ کی ذہنی صلاحیتیں بیدار ہوجائیں گی اور انشاء اللہ آپ امتحان میں پاس ہوجائیں گے۔

ٹھیک وقت پراٹھنے کیلئے روح کے الارم سے کام لیجئے

م۔ظ۔ع۔ وظیفہ پڑھنے کیلئے ٹھیک وقت پراٹھنے کیلئے روح کے الارم سے کام لیجئے ۔ طریقہ یہ ہے کہ جب آپ سونے کیلئے لیٹ جائیں تو اپنا پورا نام لے کر خود کو مخاطب کریں اور کہیں مجھے اتنے بج کر اتنے منٹ پر جگا دینا ۔ انشاء اللہ ٹھیک وقت پر نیند سے بیدار ہوجائیں گے ۔

شادی اور امتحان میں پاس ہونے کا مسئلہ

ا۔ن۔آپ اور آپ کی بہن بعد نماز عشاء 41 مرتبہ
 لا الہ الا انت سبحانک انی کنت من الظلمین
 پڑھ کر ہاتھوں پر دم کریں اور دونو ں ہاتھ اپنے اپنے چہرے پر پھیر لیں ۔ اس عمل کی برکت سے آپ کی شادی اور امتحان میں پاس ہونے کا مسئلہ دونوں حل ہوجائیں گے ۔ وظیفہ مقصد پورا ہونے تک پڑھتے رہیں ۔ ناغہ کے دنوں میں نہ پڑھیں لیکن غیر ضروری طور پر ناغہ نہ کیا جائے۔

پوشیدہ امراض سے نجات

اقتدار احمد: پوشیدہ بیماری سے نجات حاصل کرنے کیلئے ہر وقت با وضو رہیں اور سوتے وقت روئی کا گدا استعمال نہ کیا جائے ۔ دری یا چٹائی پر سویا کریں ۔ گرم چیزوں سے پرہیز کرنا ضروری ہے ۔ کچی سبزیاں اور پالک کثرت سے کھایا کریں۔ چند ہفتوں میں مرض سے مکمل نجات مل جائے گی ۔ اسی طریقہ علاج سے آپ کی ذہنی صلاحیتیں بیدار ہوجائیں گی اور انشاء اللہ آپ امتحان میں پاس ہوجائیں گے۔

چوری کی عادت

جان محمد ۔ آپ نے حالات سے مجبور ہو کر گھر میں چوری کی۔ گھر والوں نے آپ کو معاف کردیا۔ اب یہ سوچنا کہ کام ہوہی گیا ہے تو کیوں نہ اس عمل کو جاری رکھا جائے صحیح طرز فکر نہیں ہے۔ غلطی انسان سے ہوتی ہے یہاں کوئی فرشتہ نہیں ہے ۔ فرشتوں کو انسان پر اسلئے فضیلت حاصل ہے کہ وہ گناہ کرسکتا ہے ، اور جب چاہتا ہے ساری صلاحیتوں سے اجتناب کر کے مومن بن جاتا ہے ۔ حضور اکرم ﷺ کا ارشاد ہے "مومن کی فراست سے ڈرو وہ اللہ کے نور سے دیکھتا ہے" ۔ اللہ تعالیٰ نے آپ کو مومن پیدا کیا ہے اب یہ آپ کا اختیار ہے کہ آپ کیا بننا پسند کرتے ہیں ۔ بزرگوں کا ارشاد یاد رکھئے ۔ عذر گناہ بد ترین گناہ ۔ میرا مشورہ ہے کہ آپ لا حاصل باتوں سے ذہن ہٹا کر تعلیم کی طرف توجہ دیں۔ اپنے اندر خوبیاں پیدا کریں۔ اس طرح آپ خود بھی بھول جائیں گے کہ آپ نے چوری کی تھی۔

بد اخلاقی

ر۔ع۔ خط میں جن الجھنوں کا تذکرہ کیا گیا ہے ۔ وہ صحت اور انسانی صلاحیتوں کو دیمک بن کر چاٹ جاتی ہے ۔ دل، دماغ، نظر اور اعضائے جسم سب بیکار ہوجاتے ہیں۔ آدمی زندہ ضرور رہتا ہے مگر وہ چلتی پھرتی ایک لاش کی مانند ہوتا ہے ۔ زندگی میں نہ کوئی ولولہ ہوتا ہے اور نہ کوئی مقصد حیات ہوتا ہے ۔ اللہ تعالیٰ نے انسان کو اپنی صفات دے کر پیدا کیا ہے ۔ بندہ اللہ تعالیٰ کی بخشی ہوئی صفات اور عنایت کردہ اختیارات سے اپنے معاملات و مسائل میں تخریب یا تعمیر کرسکتا ہے ۔ انسان کے اندر کام کرنے والی تعمیری صلاحیتوں کو قوت ارادی سے بحال کیا جاسکتا ہے ۔ قوت ارادی بحال کرنے کیلئے ہر وقت با وضو رہنا اور یا حی یا قیوم کا ورد اکسیر کا حکم رکھتا ہے آپ بھی یہی طریقہ اختیار کیجئے ۔ کسی لڑکی کے بارے میں دوستوں کے بے ہودہ خیالات کو کوئی اہمیت نہ دی جائے۔ اپنی ساری توجہ تعلیم پر صرف کریں ۔ اگر آپ اس بد اخلاقی سے باز نہ آئے تو یاد رکھئے آپ کا مستقبل تاریک ہوجائے گا۔

شاندار نمبروں سے کامیابی

شاہ ریاض احمد: گیارہویں اور بارہویں جماعتوں کے امتحان میں اچھی پوزیشن سے کامیاب ہونے کیلئے محنت کے ساتھ ساتھ سونے سے پہلے ایک سو مرتبہ یَا اُو لِیْ الْالْبَابْ پڑھئیے ۔ مصلیٰ پر ہی آنکھیں بند کر کے یہ تصور قائم کیجئے کہ میں اللہ تعالیٰ کے سامنے بیٹھا ہوں یا یہ کہ االلہ تعالیٰ مجھے دیکھ رہے ہیں۔ تصور میں اللہ تعالیٰ سے شاندار نمبروں سے کامیابی کیلئے دعا کیجئے دعا کم سے کم دس منٹ کیجئے ۔ اس عمل کو امتحان کا نتیجہ شائع ہونے تک جاری رکھیں اللہ تعالیٰ رحیم و کریم ہیں آپ کی درخواست کو ضرور شرف قبولیت بخشیں گے۔ انشاء اللہ ۔

زبان کی لکنت اور رعشہ

نسیم وقار: ٹھنڈا پانی پینا ترک کردیجئے ۔ ازہ نیم گرم پانی پیا کیجئے ۔ ہفتہ میں ایک یا دو دفعہ خرگوش کا بھیجا بھون کر کھائیے تین ہفتہ اس علاج پر عمل کرلیں۔ انشاء اللہ آپ کی زبان کی لکنت اور ہاتھ پاؤں کا رعشہ ختم ہوجائے گا۔ اسی علاج سے آپ کی یاداشت اور احساس کمتری کی شکایت بھی رفع ہوجائے گی۔

شادی کے مسائل

ا۔ن۔آپ اور آپ کی بہن بعد نماز عشاء 
لآ اِلٰہ اِلَّآ اَنْتَ سُبْحَانَکَ اِنِّیْ کُنْتُ مِّنَ الظَّالِمِیْنَ
 پڑھ کر ہاتھوں پر دم کریں اور دونو ں ہاتھ اپنے اپنے چہرے پر پھیر لیں ۔ اس عمل کی برکت سے آپ کی شادی اور امتحان میں پاس ہونے کا مسئلہ دونوں حل ہوجائیں گے ۔ وظیفہ مقصد پورا ہونے تک پڑھتے رہیں ۔ ناغہ کے دنوں میں نہ پڑھیں لیکن غیر ضروری طور پر ناغہ نہ کیا جائے۔

نظر کی کمزوری دور کرنے کیلئے عجیب و غریب سرمہ

محمد عثمان۔سکھر: میرا دماغ بہت کمزور ہوگیا ہے ۔ کمر کی ہڈی میں درد رہتا ہے۔ چکر آتے ہیں ۔ نماز پڑھتا ہوں تو چار رکعت کی بجائے دو اور دو رکعت کی بجائے چار پڑھ لیتا ہوں ۔ التحیات اور درود شریف پرھتے پرھتے بھول جاتا ہوں ۔ کالج کی کتاب دیکھنے کو جی نہیں چاہتا ۔ پہلے یہ حال تھا کہ ہر کلاس اول پوزیشن میں پاس ہوتا تھا۔ ایک مرتبہ میں نے سارے اسکول میں ٹاپ کیا اور مجھے وظیفہ بھی ملا تھا۔ خود اعتمادی بالکل نہیں ہے ۔ نظر کمزور ہوگئی ہے اور میرے ۳ نمبر کا چشمہ لگ گیا ہے۔

جواب: آپ کے مثانہ میں کمزوری ہے ۔ اور یہ کمزوری خون میں حدت پیدا ہوجانے سے واقع ہوئی ہے ۔ دواؤں کے بجائے غذاؤں سے علاج کیا جاتا تو یہ مرض اتنا نہ بڑھتا کہ اس کی وجہ سے دماغ اور نظر بھی کمزور ہوجائے۔ آپ صبح نہار منہ دو تین موسمبی یا میٹھے سنگترے کھا لیا کیجئے ۔ چائے بالکل چھوڑ دیجئے ۔ کچی سبزیاں مثلاً شلجم ، گاجر اورپالک کھانا آپ کیلئے بہت مفید ہے ۔ گوشت میں سبزیاں استعمال کیجئے ۔ اس کے ساتھ ساتھ ایک سرمہ بنا کر آنکھوں میں پابندی سے لگائیے۔
پیلی سرسوں کا تیل کچی گھانی کا حاصل کیجئے۔ مٹی کے چراغ میں تیل اور بتی ڈال کر روشن کیجئے ۔ اور اس کے اوپر ایک کورا مٹی کا چراغ اس طرح رکھ دیجئے کہ ہوا پر نہ ہو۔ اب اس چراغ میں کاجل جمع ہوجائے گی۔ یہ کاجل کسی ڈبیا میں بھر کر رکھ دیجئے ۔ رات کو سوتے وقت دونوں آنکھوں میں تین تین سلائیاں لگائیے ۔ سلائی جست کی ہونی چاہئیے۔ چھ ماہ اس سرمہ کو آنکھوں میں لگانے سے انشاء اللہ آپ کو چشمہ لگانے کی ضرورت باقی نہیں رہے گی ۔ اس سرمہ سے آپ کی دماغی کمزوری اور چکر آنے کا سلسلہ بھی ختم ہوجائے گا۔ جب خربوزہ کا موسم آئے تو روز خربوزہ کھائیے۔ جتنا بھی کھاسکیں۔

رشتہ داروں نے جادو کرادیا ہے، بہن بھائیوں کی شادی نہیں ہوتی

محمد سلیمان کراچی: میری چھوٹی بہن کی کافی عمر ہوگئی ہے ۔ لیکن اس کی شادی میں کوئی نہ کوئی رکاوٹ پڑ جاتی ہے ۔ چھوٹے بھائی ہیں سب ماشاء اللہ برسر روزگار ہیں ۔ ان کی بھی شادی نہیں ہورہی ہے۔ میں بہت پریشان ہوں ۔ اللہ کے فضل و کرم سے اچھی آمدنی ہے ۔ مگر ہم لوگ مقروض رہتے ہیں ۔ اندازہ یہ ہے کہ عزیز رشتہ داروں نے ہمارے اوپر کچھ کرادیا ہے جس کی وجہ سے نہ تو ہماری گھر میں شادی ہوتی ہے نہ تو قرض اترتا ہے ۔ میری اپنی حالت یہ ہے کہ میں ہر وقت خوفزدہ رہتا ہوں۔ تنہا اگر کہیں جاتا ہوں تو گھبراہٹ شروع ہوجاتی ہے اور چکر آنے لگتے ہیں ۔ وظیفہ بتادیجئے کہ اس کی برکت سے اللہ تعالی چھ بہن بھائیوں کی شادی کے فرائض سے سبکدوش کردے۔ اور قرض کی مصیبت سے نجات مل جائے اور مجھے صحت حاصل ہوجائے

جواب: آپ کا یہ اندازہ غلط ہے کہ آپ کے اوپر کسی نے جادو ٹونا کرادیا ہے۔ یہ سب حالات آپ کے خود پیدا کردہ ہیں ۔ طرز زندگی میں اعتدال نہیں ہے ۔ اعتدال نہ ہونے کی وجہ سے زندگی کی اقدار بڑی حد تک متاثر ہوچکی ہے ۔ آپ اپنے گھریلو حالات اور غیر اعتدال پسند طبعیتوں کا محاسبہ کیجئے اور غور کیجئے کہ آپ کی اور گھر کے دوسرے افراد کی روش فکر میں کس طرح تبدیلی آسکتی ہے ۔ انشاء اللہ آپ کے تمام مسئلوں کا حل نکل آئے گا آپ کے لئے کسی وظیفہ یا تعویذ کی ضرورت نہیں ہے

آپ ایک بکرے کا صدقہ ضرور دیں ورنہ مشکلات بڑھ جائیں گی۔!

حاجی غلام شفیع ۔اوڑ۔بلوچستان: میں نے ایک نیا گھر تعمیر کرایا ہے جو رقم پاس تھی وہ سب خرچ ہوگئی ہے ۔ جب ہم لوگ کرائے کا مکان چھوڑ کر اپنے نو تعمیر مکان میں آ ئے تو دوست احباب اور پڑوسیوں نے اس بات پر مجبور کیا کہ ایک بکرا اللہ کے نام کا ذبح کرنا چاہئیے۔ ان سب لوگوں کا یہ کہنا تھا کہ نئے مکان میں رہائش اختیار کرنے سے پہلے قربانی ضروری ہے پہلے تو میں نے عذر کیا کہ میرے پاس خیرات کیلئے پیسے نہیں ہیں اور پھر لوگوں کے اصرار سے میرے اندر ضد پیدا ہوگئی۔ نہ تو حدیث میں ہے اور نہ ہی اللہ تعالیٰ کاا رشاد ہے کہ نئے مکان میں جانے سے پہلے بکرا قربان کیا جائے ۔ نئے مکان میں ایک ہفتہ قیام کرنے کے بعد میں پورا ایک ماہ بیمار رہا۔میں ابھی پوری طرح صحت یاب نہیں ہوا تھا کہ میرا چھوٹا بچہ بیمار ہوا اور چند دن بیمار رہ کر فوت ہوگیا ۔ اس سانحہ کے بعد میرے عزیز رشتہ دار کہتے ہیں کہ یہ مکان منحوس ہے اس کو چھوڑ کر پھر کرائے کے مکان میں واپس چلے جائیں ۔ پانچ ہزار روپے لگا کر مکان بنوایا ہے ۔ مکان کے سامنے مسجد ہے پانچ وقت کی اذان سنتے ہیں ۔ مسجد قریب ہونے کی وجہ سے نماز با جماعت ادا کر لیتا ہوں ۔ آپ اپنی رائے سے مطلع کریں کہ ہمیں کیا کرنا چاہئیے ۔

جواب: حاجی صاحب آپ نے مکان پر پانچ ہزار روپے خرچ کردئیے لیکن جس اللہ نے آپ کو یہ پانچ ہزار روپے اور آپ کا ذاتی مکان دیا اس کیلئے آپ چالیس پچاس روپے کا بکرا خیرات کرنے میں اسقدر سنجیدہ ہوگئے ہیں کہ آپ کے اندر ضد پیدا ہوگئی ہے ۔ قران پاک میں اگر یہ بات نہیں ہے کہ نئے مکان میں جانے سے پہلے بکرا خیرات کیا جائے ۔ یہ ارشاد تو ہے کہ اللہ کے لئے اللہ کے رسول کیلئے قریبی رشتہ داروں یتیموں اور مسکینوں اور اللہ کے راستے میں اپنا مال خرچ کروآپ کا کہنا درست ہے کہ موت کا ایک وقت مقرر ہے ۔ اور آدمی بیمار ضرور ہوتا ہے ۔ اس مکان کی نحوست سے کوئی تعلق نہیں ہے۔ مگر یہ دلیل اللہ کے راستے میں خرچ کرنے کے واضح امکانات پر کسی طرح اثر انداز نہیں ہوتی۔ میرا مشورہ ہے کہ آپ ایک بکرے کا صدقہ ضرور دیں ۔ اگر آپ نے اس پر عمل نہیں کیا تو ذہن پر جو گرہ پڑ چکی ہے وہ اسقدر الجھ جائے گی کہ پھر اس کا سلجھنا مشکل مسئلہ بن جائے گا۔

قوت ارادی کو ٹٹولئے

عبدالواحد لیاقت آباد ۔ عبدالماجد نام اچھا ہے۔ نام بدلنے کی ضرورت نہیں ہے۔ آپ یہ سمجھتے ہیں کہ نام بدلنے سے آپ کے اندر قوت ارادی بحال ہوجائے گی لیکن میرا خیال یہ ہے کہ نام کی تبدیلی سے کچھ نہیں ہوگا۔ آپ اپنی انا کو ٹٹولئے۔ انا کے اندر ڈوب کر اس بات کا کھوج لگائے کہ قوت ارادی کہاں دبی ہوئی ہے ۔ آپ کا علاج خارجی نہیں اندرونی ہونا چاہیئے ۔ رات کو سونے سے پہلے سیدھے لیٹ کر اپنا تصور کیجئے۔ تصور کا وقفہ پندرہ منٹ ہے۔ اس عمل کو چالیس روز برقرار رکھئے انشاءاللہ آپ کا مسئلہ حل ہوجائے گا۔