01 جون 1971

عبادت الٰہی میں دل نہیں لگتا

محمد سلیم غازیانی: پہلے میں بہت ذوق و شوق سے خدا کی عبادت کرتا تھا ۔ پڑھائی میں بھی دل لگتا تھا مگر اب دونوں طرف توجہ نہیں رہی۔ ان دونوں دلچسپیوں کو بحال کرنے کیلئے آپ کی امداد کا منتظر ہوں۔
جواب: انسان کو ہر کام میں اعتدال پیش نظر رکھنا چاہئے۔ آپ نے اعتدال کا راستہ چھوڑ کر انتہا پسندانہ طرز عمل اختیار کیا نتیجے میں آپ کو محرومی نصیب ہوئی۔خدا کی عبادت کیجئے اتنی جو فرض کی گئی ہے۔ باقی وقت فرائض زندگی کو پورا کرنے میں لگائیے ۔ وظیفہ پڑھنے کی کوئی ضرورت نہیں ہے۔

کوئی تبصرے نہیں:

ایک تبصرہ شائع کریں